jaun elia poetry on eyes

Jaun Elia Poetry: Best 50+jaun elia poetry In Urdu-(جون ایلیا کی اردوشاعری) – Poeticexplorers

Spread the love

Jaun Elia Poetry In Urdu.

Jaun Elia, the eminent Pakistani poet, is celebrated for his unparalleled mastery in crafting Jaun Elia poetry. Born in 1931, Jaun Elia poetry reflects his profound insight into the human experience.

With themes ranging from love and loss to the ephemeral nature of life, Jaun Elia poetry in Urdu has a unique and resonant quality that has left an indelible mark on literature. If You can read the best collection of jaun elia poetry & ghazal then you can come at the right place.This site can cover all types of jaun elia poetry ghazal and nazam

Jaun Elia poetry is known for its ability to deeply touch readers, evoking intense emotions and prompting profound contemplation. Whether you are a dedicated enthusiast of Jaun Elia poetry or a newcomer exploring the beauty of Jaun Elia’s poetic artistry, the allure of Jaun Elia poetry is undeniable.

Best Deep Jaun Elia Poetry In Urdu 2 lines

jaun elia poetry
jaun elia poetry

ایک ناٹک ہے زندگی جس میں

آہ کی جائے، واہ کی جائے

Aik Nattak Hai Zindagi Jis Main

Aah Ki Jaye, Wah Ki Jaye

jaun elia poetry in urdu
jaun elia poetry in urdu

اند تارے بلاوجہ خوش ہیں

میں تو کسی اور سے مُخاطب ہوں

Chaand Taare Bilawajah Khush Hain

Main Toh Kisi Aur Se Mukhatib Hun

Jaun Elia Poetry In Urdu

Also Read The post………….Best Mizra ghalib Poetry In Urdu

jaun elia poetry 2 lines
jaun elia poetry 2 lines

ہم کو یاروں نے یاد بھی نہ رکھا

جون یاروں کے یار تھے ہم تو

Hum Ko Yaaron Ny Yaad Bhi Na Rakha
Jaun Yaaron Ke Yaar Thy Hum To

jaun elia poetry
jaun elia poetry

میری ہر بات بے اثر ہی رہی

نقص ہے میرے ہر بیاں میں کیا ؟

Meri Har Baat Be-Asar He Rahi

Nukas Hai Mere Har Biyan Main Kiya ?

Jaun Elia Poetry In Urdu 2 lines

jaun elia poetry on eyes
jaun elia poetry on eyes

قیامت خیز ہیں آنکھیں تمہاری

تم آخر خواب کس کے دیکھتے ہو

Qiyamat Khaiz Hain Ankhen Tumhari

Tum Akhir Khawab Kis Se Dekhty Ho

jaun elia poetry in urdu
jaun elia poetry in urdu

مستقل بولتا رہتا ہی رہتا ہوں

کتنا خاموش ہوں میں اندر سے

Mustaqil Bolta He Rehta Hun

Kitna Khamosh Hun Main Andar Se

Best Jaun Elia Poetry In Urdu 2 Lines

emotional jaun elia poetry
emotional jaun elia poetry

دل تمنا سے ڈر گیا جانم
سارا نشہ اُتر گیا جانم

Dil Tamna Se Dar Gaya
Sara Nasha Utar Gaya Janam

کرکے ایک دوسرے سے عہد وفا
آؤ۔۔۔۔۔ کچھ دیر جھوٹ بولیں ہم

Karky aik dusry sy ehd-e-wafa
Ao…. kuch dair jhoot bolen ham

عمر ترتیب سے نہیں گزری
ٹھیک ملنے کے وقت بچھڑے ہم

Umar tarteeb sy nahi guzri
Theek milny ky waqt bichry ham

یہ مجھے چین کیوں نہیں پڑتا
ایک ہی شخص تھا جہان میں کیا

Ye mujhy chain q nahi parta
Aik hi shashiq tha jahan ma kya

کتنا رویا تھا میں تیری خاطر
اب جو سوچوں تو ہنسی آتی ہے

Kitna roya tha me teri katir
Ab jo socho to hansi ati he

جا نے کیا واقعہ ہے ہونے کو
جی بہت چاہتا ہے رونے کو

Jany kiya waqia he hony ko
Jii bohot chahta he rony ko

Heart Touching Jaun Elia Poetry 2 lines

بولتے کیوں نہیں مرے حق میں
چھالے پڑگئے زباں میں کیا

Bolty q nahi mere haq me
Chaly pargay zubaan me kiya

داستان ختم ہونے والی ہے
تم میری آخری محبت ہوں

Dastaan khatam hony wali hay
Tum meri Akri muhabbat ho

مجھ سے ملنے کو آپ آئیں ہیںِ
بیٹھیے میں بلا کے لاتا ہوں

Mujh sy milny ko app ay hay
Bethiye me bula ky lata hu

جن کے جانے سے جان جاتی تھی
ہم نے ان کو بھی جاتے دیکھا ہے

Jin ky jany sy jaan jati thi
Ham ny un ko bhi jaty dekha he

دل کی تکلیف کم نہیں کرتے
اب کوئی شکوہ ہم نہیں کرتے

Dil ki takleef kaam nahi karty
Ab koi shikwa ham nahi karty

اداسی کام اپنا کر گئی ہے
تیرے ملنے کی حسرت مرگئی ہے

Udasi kaam apna kar gai he
Tery milny ki hasraat mar gai he

چاند تارے بلا وجہ ہی خوش ہیں
میں تو کسی اور سے مخاظب ہوں

Chand tary bilawaja hi kush hen
Me to kisi aur sy mukhatib hu

تیرے آنے سے کچھ زرا پہلے
بات تجھ سے ہی کررہا تھا میں

Tere any sy kuch zara pehly
Baat tujh sy hi kar rha tha me

جانے کہا بسے گی وہ
جانے کہا رہو گا میں

Jany kaha basy gi wo
Jany kaha raho ga me

زندگی سے بہت بدظن ہیں
کاش! اک بار مرگئے ہوتے

Zindagi sy bohot badzan hen
Kassh! Ik baar mar gay hoty

اک شخص کررہا ہے ابھی تک وفا کا زکر
کاش! اس زبان دراز کا منہ نوچ لے کوئی

Ik shaks kar raha he abhi tak wafa ka zikar
Kasssh! Us zuban daraz ka mun noch le koi

وہ جو کہتا تھا تارے توڑ لاؤں گا
اس نے آسمان ہی گرا دیا مجھ پر

Wo jo kehta tha tary toor lao ga
Us ny asman hi gira diya mujh par

کہ سب سمجھتے ہیں میں تمہارا ہوں
تم بھی رہتے ہوں اس گماں میں کیا

Kay sab samjhty hen me tumhara hu
Tum bhi rehty ho is guman me kiya

کون اس گھر کی دیکھ بھال کرے
کہ روز اک نئی چیز ٹوٹ جاتی ہے

Kon is ghar ki dekh bhaal kary
Kay rooz ik nai chiz toot jati he

Best Jaun Elia Poetry In Urdu Copy paste

کیا سنائیں تمہیں حکایتیں دل
ہم کو دھوکا دیا گیا جاناں

Kiya sunay tumhy haqayaty dil
Ham ko dhoka diya gaya jana

تیرے آنے سے ،کچھ ذرا پہلے
بات تجھ سے ہی کر رہا تھا میں

Tere Aane Se, Kuch Zara Pehle
Baat Tujh Se He Kar Raha Tha Main

میری تعریف کرے یا مجھے بدنام کرے
جس نے جو بھی بات کرنی ہے سرعام کرے

Meri Tareef Kare Ya Mujhe Badnaam Kare
Jis Ne Jo Bhi Baat Karni Hai Sar-e-Aam Kare

اب سنوارتے رہو بلا سے میری
دل نے سرکار خود کشی کر لی

Ab Sanwarty Raho Blla Se Meri
Dil Ne Sarkar Khud Kashi Kar Li

اس نے ہمیں نظر انداز کیا
ہم نے انہیں نظر آنا ہی چھوڑ دیا

Us nay humay nazar andaaz kia
Hum nay nazar aana hi chor dia

مجھ سے پہلے بھی تھا کوئی اس کا
وہ میرے بعد بھی کسی اور کا ہے

Muj say pehlay b koi tha us ka
Wo meray bad b kisi aur ka hay

میرا علاج ان ہسپتالوں میں کہاں
مجھے کوٸی چھوڑ آۓ تیرے در پہ

Mera elaj un haspatalu may kaha
Mujay koi chor aye teray darr per

اے شخص میں تیری جُستجو سے
بیزار نہیں ہوں تھک گیا ہوں

Ay shaks may tere justujoo say
Bayzaar nahe hu thak gaya hu

ساری دنیا کے غم ہمارے ہیں
اور ستم یہ کہ ہم تمہارے ہیں

Sare dunyia k gham hamaray hay
Aur sitam yeh hay k hum tumaray hay

Emotional Jaun Elia Poetry

کیا ستم ہے کہ اب تری صورت
غُور کرنے پہ یاد آتی ہے

Kya sitam hay k ab tere soorat
Ghor kernay pay yad aate hay

یہ مجھے چین کیوں نہیں پڑتا
اک ہی شخص تھا جہاں میں کیا

Yeh mujay chain kyu nahe perta
Ik hi shaks tha jahan may kya

حشر میں بتاؤں گا تجھے
جو حشر تو نے کیا ہے میرا

Hasher may batayu ga tujay
Jo hasher tu nay kia hay mera

نکال ڈالئیے دل سے ہماری یادوں کو
یقین کیجئے ہم میں وہ بات ہی نہ رہی

Nikal daliye dil sy hamare yadu ko
Yakeen kijiye hum may wo bat hi na rahe

سب سمجھتے ہیں میں تمہارا ہوں
تم بھی رہتے ہو اس گماں میں کیا

Sab samajtay hay may tumara hu
Tum b rehtay ho us gaman may kya

چلو کائنات بانٹ لیتے ہیں
تم میری باقی سب تمهارا

Chalo kainat bant laitay hay
Tum mere baki sab tumara

میری تصویر کو دیکھا تو کہاں لوگوں نے
اس کو زبردستی ہنسایا گیا ہے

Mere tasweer ko dekha to kaha logo nay
Us ko zabardasti hasaya gaya hu

درد ہلکا ہے سانس بھاری ہے
جیئے جانے کی رسم جاری ہے

Dard halka hay sans bare hay
Jeeay janay ki rasm jare hay

Final Words.

In a world where words weave emotions and touch the very core of human existence, Jaun Elia poetry shines as a beacon of profound wisdom and heartfelt expression. Jaun Elia poetry in Urdu speaks directly to the soul, resonating with readers and enthusiasts of Jaun Elia poetry across the ages.

This poetic legacy is a testament to the timeless power of language to evoke deep emotions, making Jaun Elia poetry in Urdu a treasure for those who appreciate the beauty of words that transcend time and boundaries.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *