barish poetry

Barish Poetry: Best Amazing Barish Poetry In Urdu 2 Lines Text 2024 – PoeticExplorers

Spread the love

Barish Poetry In Urdu,

In this article you can read the beautiful and finest collection of barish poetry in urdu. Read and share them with your Family, Friends and your loved-one

Barish poetry, or poems about rain, is like a special kind of writing that talks about feelings and nature. It’s simple but powerful, using words to make you feel things. Imagine the sound of raindrops falling, and how it makes everything seem fresh and new.

Rain poems often talk about love, showing how it can be happy or sad, just like the rain. The poets use words to create pictures in your mind, like wet streets, the earthy smell, and shiny leaves. They want you to feel the beauty of rain and emotions, making ordinary things seem magical. Reading rain poetry is like taking a walk in the rain with your feelings, and it helps you see the world in a special way.

Trending Posts this month.

Best Deep Barish Poetry In Urdu 2 Lines Text

سنا ہے بارش اُسے بھی پسند ہے
وہ بھی میری طرح برستی بوندوں کو ہاتھوں میں سما لیتی ہے

Suna hai barish usay bhi pasand hai
Wo b meri tarha barasti bundon ko hathon may sama leti hay

Barish Poetry In Urdu

barish poetry in urdu
barish poetry in urdu

اب بھی بھیگی بارش میں وہ بن کے چھتری چلتا ہوگا
مجھ سے بچھڑے عرصہ بیتا اب وہ کس سے لڑتا ہوگا

Ab b bheegi barish mein wo ban ke chattri chalta hoga
Mujh say bichray arsa beeta ab wo kis se larta hoga

Barish Poetry In Urdu 2 lines Text

barish poetry in urdu 2 lines text
barish poetry in urdu 2 lines text

تیری قربت بھی نہیں ہوئی میسر
اور دن بھی بارشوں کے آگئے ہیں

Teri qurbat b nahe hue muyassar
Aur din b barishon ke aa gaye hain

barish poetry in urdu
barish poetry in urdu

گنگناتی ہوئی آتی ہیں فلک سے بوندیں
کوئی بادل تیری پازیب سے ٹکرائی ہے

Gungunati hui aati hain falak se boodain
Koi badal teri pazeb se takrai hai

barish poetry in urdu copy paste

barish poetry sad
barish poetry sad

کیا روگ دے گئ ہے یہ نئے موسم کی بارش
مجھے یاد آرہے ہیں مجھے بھول جانے والے

Kya roog day gayi hai yeh naye mausam ki barish,
Mujhe yaad aa rahay hain mujhe bhool jane walay

barish poetry in urdu text
barish poetry in urdu text

اب کون سے موسم سے کوئی آس لگائے
برسات میں بھی یاد نہ جب اُن کو ہم آئے

Ab kaun se mausam se koi aas lagaye
Barsaat mein bhi yaad na jab un ko hum aye

deep barish poetry
deep barish poetry

Top Barish Poetry In Urdu Copy paste Text

اس بارش کے موسم میں عجیب سی کشِش ہے
نہ چاہتے ہوئے بھی کوئی شِدت سے یاد آتا ہے

Is baarish ke mausam main ajeeb si kashish hai
Na chahte howay bhi koi shidat say yaad aata hai

barish poetry in urdu copy paste
barish poetry in urdu copy paste

ہم سے پوچھو مزاج بارش کا
ہم جو کچے مکان والے ہیں

Ham se puchho mizaj barish ka
Ham jo kachche makan waale hain

barish poetry in urdu
barish poetry in urdu

Best Deep Barish Poetry In Urdu 2 lines Text

ٹھہرتا ایک بھی منظر نہیں ویران آنکھوں میں
ہمارے شہر سے بادل بھی بغیر برسے نکلتا ہے

Theharta aik bhi manzar nahi weeran ankhu mai
Hamare shehar se badal bhi begair barse nikalta hai

فرقتِ یار میں اِنسان ہوں میں یہ کی صاحب
ہر برس آ کے رُلا جاتی ہے برسات میں

Furqat-e-yaar mein insaan hu main yeh ki sahab
Har baras aa ke rula jaati hai barsat mujhe

برس رہی تھی بارش باہر
اور وہ بھیگ رہا تھا مجھ میں

Baras rahi thi barish bahar,
Aur woh bheeg raha tha mujh mein

اب کے بارش میں تو یہ کارِ زیان ہونا ہی تھا
اپنی کچی بستیوں کو بےنشان ہونا ہی تھا

Ab k barish mein to ye kar-e-ziyan hona hi tha
Apni kachchi bastiyon ko be-nishan hona hi tha

Barish Poetry

دور تک پھیلا ہوا پانی ہی پانی ہر طرف
اب کے بادل نے بہت کی مہربانی ہر طرف

Door tak phaila hua paani hi paani har taraf
Ab ke badal ne bohat ki mehrbani har taraf

رِم جِھم رِم جِھم برس رہی ہے
یاد تمھاری قطرہ قطرہ

Rim jim rim jim baras rahi hai
Yaad tumhaari qatraa qatraa

وہ تو بارش کی بوندیں دیکھ کر خوش ہوتا ہے
اس کو کیا معلوم کے ہر گرنے والا قطرہ پانی نہیں ہوتا

Wo to baarish ki boondain dekh kr khush hota hai
Us ko kia maloom ke har girne wala qatra paani nahi hota

اس نے بارش میں بھی کھڑکی کھول کے دیکھا نہیں
بھیگنے والوں کو کل کیا کیا پریشانی ہوئی

Us ne barish mein bhi khidki khol ke dekha nahin
Bheegne valon ko kal kya kya pareshani hui

ٹھکرا سکی نہ آندھی کِرن کے سوال کو
پھیلا دیا ہے شب نے ستاروں کے جال کو

Thukra saki na andhi kiran ke sawal ko
Phela diya hy shab ny sitaron ke jaal ko

طوفان بڑھ گیا چاروں طرف حد سے زیادہ
میں اپنی دل کی خوشبوئیں اُگلنا چاہتا ہوں

Taufun bar gaya charon taraf hadd se ziyada
Mai apny dil ki khusboen ugalna chatha hu

بارش تهی بھیگی رات تھی میں بھیگتا رہا
قدموں کے تیرے سب نشاں میں کھوجتا رہا

Baarish thi bheegi raat thi, main bheegta raha
Qadmon ke tere sab nishaan main khojta raha

Barish Poetry In Urdu Text

ضبطِ گر یہ کبھی کرتا ہوں تو فرماتے ہیں
آج کیا بات ہے برسات نہیں ہوتی ہے

Zabat e ghar ye kabhi karta hoon to farmate hain,
Aaj kya baat hai barsaat nahin hoti hai

ایک رونے سے تُو مل جائے تو خدا کی قسم
اس دھرتی پہ ساون کی برسات لگا دوں

Ek roney se tu mill jaye to khuda ki kasam
Is dharti pe sawan ki barsaat laga doon

وہ مجھ سے میرے آنسو کی وجہ پوچھتا ہے
کتنا پاگل ہے بارش کے برسنے کی وجہ پوچھتا ہے

Woh muj se mere ansu ki wajah poochta hai
Kitna pagal hai barish ke barasne ki wajah poochta hai

فلک پر اُڑتے جاتے بادلوں کو دیکھتا ہوں میں
ہوا کہتی ہے مجھ سے یہ تماشا کیسا لگتا ہے

Falak par urtay jaate badalon ko dekhta hoon main
Hawa kehti hai mujh se ye tamasha kaisa lagta hai

کچی دیواروں کو پانی کی لہر کاٹ گئ
پہلی بارش ہی نے برسات کی ڈھایا ہے مجھے

Kachchi diwaron ko paani ki lehar kaat gai
Pehli barish hi ne barsat ki dhaya hai mujhe

دھوپ نے گزارش کی
ایک بوند بارش کی

Dhuup ne guzarish ki
Ek boond barish ki

تمام رات نہایا تھا شہر بارش میں
وہ رنگ اتر ہی گئے جو اترنے والے تھے

Tamam raat nahaya tha shehar barish mein
Wo rang utar hi gaye jo utarne waale the

اب بھی برسات کی راتوں میں بدن ٹوٹتا ہے
جاگ اٹھتی ہیں عجب خواہشیں انگڑائی کی

Ab b barsat ki raton mein badan tootta hai
Jaag uthti hain ajab khuwhishen angrae ki

ٹوٹ پڑتی تھیں گھٹائیں جن کی آنکھیں دیکھ کر
وہ بھری برسات میں ترسے ہیں پانی کے لیے

Toot padti thi ghataen jin ki ankhen dekh kar
Wo bhari barsaat mein tarse hain paani ke liye

Rain Poetry

میں وہ صحرا جسے پانی کی حوس لے ڈوبی
تو وہ بادل جو کبھی ٹوٹ کے برسا ہی نہیں

Main wo sahra jise paani ki havas le doobi
Tu wo badal jo kabhi toot ke barsa hi nahin

برسات کے آتے ہی توبہ نہ رہی باقی
بادل جو نظر آئے بدلی میری نیت بھی

Barsat ke aate hi tauba na rahi baaqi
Badal jo nazar aaye badli meri niyat b

دور تک چھائے تھے بادل اور کہیں سایہ نہ تھا
اس طرح برسات کا موسم کبھی آیا نہ تھا

Door tak chahiye thay badal aur kahin saaya na tha
Is tarah barsat ka mousam kabhi aaya na tha

کچے مکان جتنے تھے بارش میں بہہ گئے
ورنہ جو میرا دکھ تھا وہ دکھ عمر بھر کا تھا

Kachche makan jitne the barish mein bah gaye
Varna jo mera dukh tha wo dukh umar bhar ka tha

ساتھ بارش میں لیے پھرتے ہو اس کو انجُم
تم نے اس شہر میں کیا آگ لگانی ہے کوئی

Saath barish mein liye phirte ho us ko anjum
Tum ne is shehar mein kya aag lagani hai koi

آ گئی تھی ایک دن تنہائی بھی جذبات میں
آنکھ سے بھی چند بوندیں گِر پڑی برسات میں

Aa gayi thi ek din tanhayi bhi jazbaat mein
Aankh se bhi chand boondein gir padi barsaat mein

کیسی بیتی رات کسی سے مت کہنا
سپنوں والی بات کسی سے مت کہنا
کیسے اٹھے بادل اور کہا ٹکرائے
کیسی ہوئی برسات کسی سے مت کہنا

Kaisi beeti raat kissi se mat kehna,
Sapnon wali baat kissi se mat kehna,
Kaisay uthay badaal or kahan takray,
Kaisi hui barsaat kissi se mat kehna

یاد آئی وہ پہلی بارش
جب تجھے ایک نظر دیکھا تھا

Yaad aayi wo pehli barish
Jab tujhe ek nazar dekha tha

Conclusion.

In the end, barish poetry is like having a cozy talk with words and rain. It takes regular stuff, like the sound of raindrops or wet streets, and makes them feel special by wrapping them in emotions.

These poems let us feel love, happiness, and sometimes a bit of sadness, just like how rain does. Barish poetry helps us see the magic in everyday things and connects us with nature and our feelings. So, the next time it rains, maybe we’ll look at it in a new way, thanks to the simple and enchanting world of barish poetry.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *